Day: February 2, 2019

نیلی نوٹ بک ۔۔۔ انور سجاد

February 2, 2019

نیلی نوٹ بُک ( عمانویل کزا کیویچ )  مترجم: ڈاکٹر انور سجاد عمانویل کزا کیویچ 1913 میں یوکرین میں پیدا ہوا ۔1932 میں اسکی نظموں کا پہلا مجموعہ ” ستارہ ” کے نام سے شائع ہوا جس نے اسے پوری دنیا سے متعارف کروایا۔ بعد ازاں اس کی لکھی کتابیں ، اودر کی بہار، دل […]

Read More

لینن کا نظریہ جمالیات ۔۔۔ کروپسکایا

February 2, 2019

لینن کا نظریہِ جمالیات ( کروپسکایا ) “موسمِ خزاں کے آخر میں جب برف باری ابھی تک شروع نہیں ہوئی تھی۔ لیکن دریا پہلے سے منجمد تھے۔ ہم وہاں ندیوں پر بہت دور تک نکل جاتے تھے۔ ہر کنکر اور ہر چھوٹی سے چھوٹی مچھلی برف کی تہہ میں ایسے جیسے کوئی ساحرانہ بادشاہت ہو، […]

Read More

جنت بدر ۔۔۔ احمد داود

February 2, 2019

جنت بدر ( احمد داود ) ” میں چھپ کر دیکھوں گا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور تم عشق کرو “۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اس نے میرا منہ میٹھے سے بھر دیا اور کپڑوں پر عطر چھڑک کر خود ستون کی اوٹ میں چلا گیا۔ جس طرح تھوڑی دیر قبل چاند دیوار کی آڑ میں جا کر ہماری خاطر تاریکی پھیلا […]

Read More

اٹھارواں حملہ ۔۔۔ ثناور چدھڑ

February 2, 2019

اٹھارواں حملہ ( ثناور چدھڑ ) ” اب جا ۔۔۔ کل آ ۔۔۔ چپ رہ ۔۔۔ اب جا ۔۔۔ کل آ ۔۔۔ چپ رہ ۔۔۔” گامی ساری دیہاڑ دا تھکا ٹٹا ریڑھی دھکدا گھر پرتیا تاں اگے اوہدا نکا پتروارث، ماں نال بیٹھا ہویا قاعدہ کھول کے اک  سطر تے انگل پھیر کے زور زور […]

Read More

غزل ۔۔۔ صغیر ملال

February 2, 2019

غزل ( صغیر ملال ) برائے نام سہی سایئباں ضروری ہے زمین کے لیے اک آسماں ضروری ہے تعجب ان کو ہے کیوں میری خود کلامی پر ہر آدمی کا کوئی رازداں ضروری ہے ضرورت اسکی ہمیں ہے مگر یہ دھیان رہے کہاں وہ غیر ضروری کہاں ضروری ہے کہیں پہ نام ہی پہچان کے […]

Read More

پھولوں کے لیے نظم ۔۔۔ ذیشان ساحل

February 2, 2019

پھولوں کے لیے نظم ( ذیشان ساحل ) پھول کھلے ہوئے ہیں ریلوے لائن کے ساتھ ساتھ اور ایئر پورٹ پر رن وے کے ساتھ چرچ کے احاطے اور فلیٹ کی بالکنی میں پانی کے کنارے اور کھیتوں کی منڈیروں پر خوابوں کے میدان اور تمہاری آنکھوں مین پھول سجے ہوئے ہیں میز پر منتظر […]

Read More

ہواواں دے خط ۔۔۔ عرفان اسلم

February 2, 2019

ہواواں دے خط ( عرفان اسلم ) راتیں ہوا تے خط لکھے سن ہوکے، ہاواں، گلے، میہنے سارے ای درد لکھ کے اپنے آپ نوں پوسٹ کر دتے تینڈا پتہ نہیں سی کول ایتھے بہہ کے تینوں سوچدے پئے آں تیرے نال بہہ کے کسے ہور نوں سوچاں گے اسی مرن جوگے اپنے پیاریاں دیاں […]

Read More
Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: