غزل ۔۔۔۔ اعزاز احمد آذر

Aizaz Ahmed Azar was a renowned Urdu and Punjabi poet and playwright. . He secured Gold medal in M.A. Punjabi from Punjab university.He authored  about 10 collections of poetry in both the languages.

غزل

(اعزاز احمد آذر )

تم ایسا کرنا کہ کوئی جگنو کوئی ستارہ سنبھال رکھنا 
مرے اندھیروں کی فکر چھوڑو تم اپنے گھر کا خیا ل رکھنا
اُجاڑ موسم میں ریت دھرتی پہ فصل بوئی تھی چاندنی کی
اب اُس میں اُگنے لگے اندھیرے تو کیسا جی میں ملال رکھنا
دیارِ الفت میں اجنبی کو سفر ہے درپیش ظلمتوں کا
کہیں وہ راہوں میں کھو نہ جائے ذرا دریچہ اُجال رکھنا
وہ رسم و رہ ہی نہیں تو پھریہ اثاثے کس کام کے تمھارے
اُدھر سے گزرا کبھی تو لے لوں گا تم مرے خط نکال رکھنا
بچھڑنے والے نے وقتِ رخصت کچھ اس نظر سے پلٹ کے دیکھا
کہ جیسے وہ بھی یہ کہہ رہا ہو، تم اپنے گھر کا خیال رکھنا
یہ دھوپ چھاؤں کاکھیل ہے یاں خزاں بہاروں کی گھات میں ہے
نصیبِ صبح عروج ہو تو نظرمیں شامِ زوال رکھنا
کسے خبر ہے کہ کب یہ موسم اُڑا کے رکھدے گا خاک آذر
تم احتیاطاً زمیں کے سر پر فلک کی چادر ہی ڈال رکھنا

Advertisment

Be the first to comment

Share your Thoughts:

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.