غزل ۔۔۔ عائشہ مسعود

ayesha-masood-poetry-aeena-khayal

غزل

(عائشہ مسعود)

آیئنہ خیال میں، وہم و گمان میں رہا

جھونکا ہوا کا دیر تک دل کے مکان میں رہا

گردو غبار سے یہاں کتنے نشان مٹ گئے

لیکن جو بے نشان تھا، نام و نشان میں رہا

زور ہوا سے اڑ کے بھی پہنچے جو آسمان تک

تھوڑی ہی دیر آسماں انکی اڑان میں رہا

رسم و رواج تلخ تھے شکوے شکائتیں بھی تھیں

پھر بھی مگر یہ سلسلہ حرف و بیان میں رہا

لمحہ بہ لمحہ عمر بھر جلتا رہا چراغ اک

یادوں کا اک جہاں تھا ریہ جان میں رہا

Advertisment

Be the first to comment

Share your Thoughts: