شاعری

افتاد ۔۔۔ مجید امجد

March 16, 2019

اُفتاد ( مجید امجد ) کوئی دوزخ، کوئی ٹھکانہ تو ہو کوئی غم، حاصل ِ زمانہ تو ہو لالہ و گل کی رت نہیں، نہ سہی کچھ نہ ہو شاخ ِ آشیانہ تو ہو کہیں لچکے بی آسمان کی ڈھال یہ حقیقت کبھی فسانہ تو ہو کسی بدلی کی ڈولتی چھایا کوئی رختِ مسافرانہ تو […]

Read More

ستم تو یہ ہے ۔۔۔ حسن عباس رضا

March 16, 2019

ستم تو یہ ہے ( حسن عباس رضا ) ستم تو یہ ہے کہ دست کوزہ گراں میں کوئی ہنر نہیں تھا وگرنہ جوہر بلا کے چاکوں پہ گھومتی اور خاک اڑاتی سفال میں تھے وہ اسمِ اعظم جو زیر ِ سنگ آمدہ دکھی ہاتھ کی رہائی کا گیت ُبنتا کسی کو از بر کہاں […]

Read More

غزل ۔۔۔ فرح خاں

March 16, 2019

غزل ( فرح خاں ) فصیلِ جان پہ سائے ہیں زرد بیلوں کے یہ کیسے ابر سے چھائے ہیں زرد بیلوں کے تمہاری آنکھوں پہ خوشبو اتر چکی لیکن ہمیں تو خواب تک آئے ہیں زرد بیلوں کے وہ سرخ پھول کتابوں میں دیکھ روتا رہا جسے بھی قصے سنائے ہیں زرد بیلوں کے خبر […]

Read More

ہوا بے خبر ہے ۔۔۔ اصغر ندیم سیـد

March 9, 2019

ہوا بے خبر ہے (آصغر ندیم سیـد ) ہوا بے خبر ہے یہاں جو ہوا ہے یہ اپنے تسلسل میں چلتی ہے دل میں اترتی ہے اور بے خبر ہے کتابوں کے صفحے الٹی ہے خالی مکانوں سے نفرت بھری نیتوں سے گزرتی ہے افسردہ بچوں کی خواہش سے، سرما کے بادل سے بے مہر […]

Read More

کچی نیند میں ۔۔۔ شہناز پروین سحر

March 9, 2019

کچی نیند میں ( شہناز پروین سحر ) اک مورت سانسیں لیتی ہے  وہ جیتی ہے اور جاگتی ہے جب لمس کیا ، معلوم ہوا اپنا ہی چہرہ مہرہ ہے ، اپنی ہی بانہیں ، اور یہ اپنے خالی ہاتھ پھر یکدم اک احساس ہوا سب کچھ مٹی ہی ہو نا ہے جو آج ہے […]

Read More

نظم ۔۔۔ عذرا عباس

March 9, 2019

نظم ( عذرا عباس ) ہر دن میں تمہارے اور اپنے درمیان ایک اینٹ رکھ دیتی ہوں اینٹ کے اوپر دوسری اینٹ میرے پاس بجری اور سیمنٹ نہیں ارادہ بھی نہیں بس اینٹیں ہیں میں اینٹیں تلے اوپر رکھتی جاتی ہوں تم مجھ سے ذرا دور ایک کرسی پر بیٹھے ہو صبح کی دھوپ سے […]

Read More

جُوتے بہت کاٹتے ہیں ۔۔۔ ابرار احمد

March 2, 2019

جوتے بہت کاٹتے ہیں ( ابرار احمد ) رات بھر کون تھا ساتھ میرے جسے میں بتاتا رہا اس جگہ شہر تھا اور سیٹی بجاتے ہوئے نو جواں اس پہ اتری ہوئی رات سے یوں گزرتے کہ جیسے یہی ہو گزرگاہ ہستی اسی میں کہیں ہو سراغ تمنا یہاں موڑ تھا جس پہ بس ٹھہرتی […]

Read More

ہمدردی ۔۔۔ صبا اکرام

March 2, 2019

 ہمدردی ( صبا اکرام )  سڑک پر خون میں لتھڑا پڑا وہ حادثے کا ایک زخمی تھا چلو اس کی مدد کرتے ہین لمحہ بھر کو سوچا تھا مگر فورا خیال آیا کہیں مشکل میں اپنی جاں نہ پھنس جائے کہ اس میں دو اور دو کے چار ہونے کی کوئی صورت نہ تھی ہاں […]

Read More

مجھ کو یادوں کا سحر مارتا ہے ۔۔۔ نادیہ عنبر

March 2, 2019

غزل ( نادیہ عنبر لودھی ) ہم کو آغاز ِ سفر مارتا ہے مرتا کوئی نہیں ڈر مارتا ہے    زندگی ہے مری مشکل میں پڑی ہجر تو اس سے سوا مارتا ہے  تیری قربت نہیں مجھ سے، نہ سہی مجھ کو تو حسن ِ نظر مارتا ہے  زندگی اس کی ہے محتاج مگر دے […]

Read More

میں ڈرتا ہوں مُسرت سے ۔۔۔ میرا جی

February 23, 2019

: میں ڈرتا ہوں مسرت سے ( میرا جی ) میں ڈرتا ہوں مسرت سے کہیں یہ میری ہستی کو پریشاں کائناتی نغمۂ مبہم میں الجھا دے کہیں یہ میری ہستی کو بنا دے خواب کی صورت  مِری ہستی ہے اک ذرہ  کہیں یہ میری ہستی کو چکھا دے کہر عالم تاب کا نشہ ستاروں […]

Read More
Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: