غزل ۔۔۔ اقبال ساجد

 

Iqbal Sajid was born in 1932 in Landhoora of district Saharanpur. He migrated to Lahore after partition. He had studied only till his tenth class. His penury forced him to sell his poetry but this proves the salability of his poetry. He wrote under the pen name Sajid. For a few days he worked for Radio Pakistan. He was a columnist as well.

غزل

(اقبال ساجد )

اپنی انا کی آج بھی تسکین ہم نے کی

جی بھر کے اس کے حسن کی توہین ہم نے کی

لہجے کی تیز دھار سے زخمی کیا اسے

پیوست دل میں لفظ کی سنگین ہم نے کی

لائے بروئے کار نہ حسن جمال کو

موقع تھا پھر بھی رات نہ رنگین ہم نے کی

جی بھر کے دل کی موت پہ رونے دیا اسے

پرسہ دیا نہ صبر کی تلقین ہم نے کی

دریا کی سیر کرنے اکیلے چلے گئے

شام ِ شفق کی آپ ہی تحسین ہم نے کی

Advertisment

Be the first to comment

Share your Thoughts: