Day: May 18, 2019

دُعائے مستجاب ۔۔۔ ثمینہ سیـد

May 18, 2019

دعائے مستجاب ثمینہ سید  بچے بہت معصوم ہوتے ہیں۔ان کی ہر دعا اللہ پاک پوری توجہ سے سنتے ہیں اور پوری کرتے ہیں عنبرین بہتے آنسووُں کے ساتھ بیٹے کے بالوں میں انگلیاں پھیرتے ہوئے آواز کو ذرا صاف کر کے اس کی توجہ بٹا رہی تھی۔ “مِیں کہوں بابا جانی واپس آجائیں۔ تو یہ […]

Read More

One Hundred Years of Solitude … Garcia Marquez

May 18, 2019

GABRIEL GARCIA MARQUEZ was born in Aracataca, Colombia in 1928, but he lived most of his life in Mexico and Europe. He attended the University of Bogota and later worked as staff reporter and film critic for the Colombian newspaper El Espectador. In addition to ONE HUNDRED YEARS OF SOLITUDE, he has also written two […]

Read More

آخری جلسہ ۔۔۔ آندرے گروشینکو

May 18, 2019

آخری جلسہ آندرے گروشینکو مترجم: ستار طاہر بڈھے باشکوف نے اپنی بہو سے کہا: “جانتی ہو، آج کیا دن ہے۔ دیکھو، دھوپ نکل آئی، میرے باہر بیٹھنے کا انتظام کر دیا؟” بہو مسکرائی، وہ اچھے نین نقش کی تھی، لیکن اس کا وزن بڑھتا جارہا تھا اور وہ خاصی بے ڈول ہورہی تھی، بڈھے باشکوف […]

Read More

مُردیاں دا رنگ ۔۔۔ ظل ھما بخاری

May 18, 2019

مُردیاں دا رنگ ( ظل ہما بخاری ) بڑے تھکے تھکے تے ڈھلے ڈھلے انداز نال کپڑیان دا جائزہ لے رہی سی۔ کوئی سمجھ نہیں سی آرہی کہ کیہڑے کپڑے پاواں۔ کمرہ بند سی، کنڈہ وی چاہڑیا ہویا سی کہ آرام نال تیار ہوواں۔ اک سوہا جوڑا نال لا کے شیشے وچ اپنا آپ تکن […]

Read More

غزل ۔۔۔ جاوید شاہین

May 18, 2019

غزل ( جاوید شاہین ) تشہیر کو کچھ شوق ِ خریدار بھی رکھ لے چیزوں میں کوئی چیز چمکدار بھی رکھ لے ہے تیز بہت بھاو خریداری ء گُل کا بازار میں اب نرگس ِ بیمار بھی رکھ لے آسان ہو قاتل کی کوئی ایک تو مشکل رکھا ہے جہاں سر کو وہیں دار بھی […]

Read More

غزل ۔۔۔ ش۔زاد

May 18, 2019

غزل ( ش  زاد  ) ﻋﮑﺲ ﺟﻮ ﺳﺎﻣﻨﮯ ﭘﮍﮮ ﮨﻮﺋﮯ ﺗﮭﮯ ﺍﻥ ﻣﯿﮟ ﺗﻮ ﺁﺋﯿﻨﮯ ﺟﮍﮮ ﮨﻮﺋﮯ ﺗﮭﮯ ﺷﺎﺥ_ﺟﺎﮞ ﺗﮭﯽ ﻧﺤﯿﻒ ﺣﺪ ﺳﮯ ﻧﺤﯿﻒ روح کے ﭘﺎﺕ بھیﺟﮭﮍﮮ ﮨﻮﺋﮯ ﺗﮭﮯ ﺳﻄﺢ ﮐﯽ ﺗﯿﺰ ﺭﻭ ﮨﻼ ﻧﮧ ﺳﮑﯽ ﺍﺗﻨﯽ ﮔﮩﺮﺍﺋﯽ ﻣﯿﮟ ﮔﮍﮮ ﮨﻮﺋﮯ ﺗﮭﮯ ﺟﺲ ﮐﯽ ﺩﮬﺮﺗﯽ ﺗﻤﺎﻡ ﺩﻟﺪﻝ ﺗﮭﯽ ﮨﻢ ﺑﮭﯽ اس ﺩﯾﺲ ﻣﯿﮟ ﺑﮍﮮ […]

Read More

غزل ۔۔۔ نینی مظفر

May 18, 2019

غزل ( نینی مظفر ) زندگی ہو گئ بسر تنہا قافلہ ساتھ اور سفر تنہا ہر طرف شور و غل ہے لوگوں کا اور نیزے پہ ایک سر تنہا کس طرح توڑ دوں میں زنجیریں کس طرح چھوڑ دوں میں گھر تنہا دیکھ پہلے نہیں کمی کوئی اور مجھ کو نہیں تو کر تنہا ہونٹ […]

Read More

پہیلی اور مصـور

May 18, 2019

پہیلی اور مصور ( سبین علی ) آنکھیں سراپا سوال ہیں کھڑکی کے پار سے تکتی ہوئی زمان و مکاں سے ماورا فلک کا پردہ چاک کرتے ہوئے دو بھوری آنکھیں جو کسی مقناطیسی ڈارک میٹر کا نورانی عکس ہیں گویا وہ سوال کرتی ہیں بارشوں کے رب سے بارشیں!!! جو جنگلی گھاس کو بھی […]

Read More
Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: