چشم ِ زدن ۔۔۔ کشور ناھید

چشم زدن

کشور ناہید

اتفاقات دیکھو

ہم دونوں ایک ہی لفٹ میں تھے

بس ہم دونوں تھے

ہم نے ایک دوسرے کی جانب دیکھا اور بس

قربت لفظ کے بغیر مکمل ہو گئی

وہ پانچویں منزل پر اتر گئی

اور میں اوپر چلا گیا

جانتا تھا کہ اس سے پھر ملاقات نہ ہو سکے گی

یہ بھی جانتا تھا کہ اگر میں نے اس کا تعاقب کیا

تو میں اس کے راستے پر مردہ فرد کی طرح ہوں گا

مجھے یاد ہے

اس کے خیالات انگور کی مانند

اور جذبات شراب کی طرح تھے

میں رات بھر اس لذت سے سرشار رہا

مگر صبح ہونے تلک

خالی بوتلوں اور اجڑے سگرٹوں کی مانند

میرا جسم کمرے پہ محیط تھا۔

Similar Posts:

Facebook Comments Box

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Calendar

January 2022
M T W T F S S
 12
3456789
10111213141516
17181920212223
24252627282930
31