Day: June 10, 2017

اپنے حصے کا یوسف ۔۔۔ سعدیہ بلوچ

June 10, 2017

اپنے حصے کا یوسف (سعدیہ بلوچ) خزاں کنویں کی تہہ میں اگ آئی ہے بہاروں کو عکس دیکھنے میں دقت ہو رہی ہے ہر بار ڈول میں کنویں کی اداسی بھر آتی ہے قافلہ کنویں کی تہہ میں اگی خزاں کی فصلیں بھر کے لے گیا تو ؟ کنواں اپنے حصے کے یوسف کو پکارتا […]

Read More

گوشہ ء غالب ۔۔۔۔ راشد جاوید احمد

June 10, 2017

نقش فریادی ہے کس کی شوخی تحریر کا  کاغذی ہے پیرہن ہر پیکر تصویر ک غالب کا یہ شعر سر مطلع ء دیوان ہے۔ نقش کنایہ ہے مخلوقات سے، تحریر کنایہ ہے تخلیق سے، شوخی کے کئی معنی ہیں، شرارت دل لگی، گستاخی۔ رعنائی ، دلکشی۔غالب نے ایک خط میں خود اس شعر کا مطلب […]

Read More

آٹۓ دیاں چڑیاں ۔۔۔ بلوندر سنگھ بلٹ

June 10, 2017

آٹے دیاں چڑیاں بلوندر سنگھ بلٹ ماں ایہہ اُڈدیاں کیوں نآہیں ‘‘دھیے ایہہ آٹے دیاں چڑیاں نے… تاں کرکے۔’’ ‘‘ماں چِڑیاں تاں چڑیاں ہُندیاں نے۔’’ ‘‘نیں دھیے … آٹے دیاں چڑیاں، چڑیاں نہیں ہُندیاں۔’’ ماں ٹھرھمے نال میریاں ارلیاں-پرلیاں دے جواب دندی۔ روٹی پکاؤندی ماں کول بیٹھی میں پرات ’چوں آٹے دے دو پیڑے کڈھدی تے […]

Read More

آگے بڑھو ۔۔۔۔ ارون دھتی رائے

June 10, 2017

آگے بڑھو۔۔۔ (ارون دھتی رائے) چائے کے باغات میں جنم لینے والی وہ سانولی سلونی لڑکی جس کی ماں ایک اداس عورت اور جس کا باپ ایک شرابی مرد تھا! جو گوا کے ساحلوں پر تازہ کیک بیک کرکے بیچا کرتی تھی! جو مردوں کے معاشرے میں ایک جرم بن کر جیتی تھی! جو دل […]

Read More

پڑھی نماز تے ۔۔۔۔ بلھے شاہ

June 10, 2017

پڑھی نماز تے نیاز نہ سِکھیا ۔ بلھے شاہ   پڑھی نماز تے نیاز نہ سِکھیا تیریاں کِس کَم پڑھیاں نمازاں ۔ تم نماز پڑھتے ہو مگر تمھارے اندر ابھی تک عجز نہیں آیا ۔ ایسی نماز کا کیا فائدہ علم پڑھیا تے عمل نہ کیتا تیریاں کِس کَم کیتیاں واگاں ۔ تم نے بہت ساری […]

Read More

چاند کو چھونے کی خواہش ۔۔۔ سلمی جبیں

June 10, 2017

 چاند کو چھونے کی خواہش سلمی جبین ” بائے دی وے—– آپ لوگوں میں سے کوئی بھی مجھے ٹیچر کہہ کر نہ بلائے ، میں نے رول کال کرتے ہوئے اپنے طالب علموں کو تنبیہ کی ” سب میرا نام لیں یعنی صباحت—– یہی یہاں کی روایت ہے” ، لڑکیوں لڑکوں میں چہ میں گوئیاں […]

Read More

مقدس درخت ۔۔۔ محمد زفزاف

June 10, 2017

مقدس درخت محمد زفزاف) مراکش) کچھ نیم خواندہ نوجوان مسکرا رہے تھے۔ ان کی ہنسی سے طنز و استہزا صاف جھلک رہا تھا۔ ان کی بلا سے اگر ایک درخت کو اس ویرانے سے کاٹ دیا جائے۔ چاہے یہ درخت باغ کا سب سے تناور درخت ہی کیوں نہ ہو جس کی شاخیں رسیلے اور […]

Read More
forty-rules-love-elif-shafak

Forty Rules of Love …Elif Shafak

June 10, 2017

FORTY RULES OF LOVE Elif Shafak Click on one of the links below for a detailed review الف شفق: میری پسندیدہ ناول نگار Elif Shafak : My Favorite Novel Writer Rule 1 How we see God is a direct reflection of how we see ourselves. If God brings to mind mostly fear and blame, it […]

Read More
Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: