Urdu اردو

A collection of Urdu poetry, stories, essay and literature in general. Penslips magazine strives to bring the literary works of classic and contemporary Urdu writers and poets to a single platform.

Urdu is the national language of Pakistan and therefore, spoken, read, and understood by majority of Pakistanis living at home or abroad. Moreover, this language is also spoken and understood by millions of Indians, serving as a language of peace and a primary language for cross cultural exchange within the subcontinent.

Despite sharing an Indo-Aryan base with Hindi, evolution of Urdu is aligned with various invasions of the subcontinent, starting from the Muslim conquest of Sindh in 711. The language is influenced by some of the richest languages such as Persian (Farsi), Arabic, Punjabi and Haryanvi.

Scroll down to discover a unique collection of poetry, short stories, essay, as well as criticism, reviews, and much more on Penslips.

In this section, you will also find foreign literature translated in Urdu; an effort to add to the richness of this beautiful language.

 

بیڑیاں ۔۔۔ عصمت چغتائی

December 7, 2019

2 بیڑیاں ( عصمت چغتائی ) ’’تو یہ ہیں تمہاری قبر آپا۔۔۔ لا حول و لا قوۃ وحید نے اچھا بھلا لمبا سگریٹ پھینک کر دوسرا سلگا لیا۔ کوئی اور وقت ہوتا تو جمیلہ اس سے بری طرح لڑتی اسے یہی برا لگتا تھا کہ سگریٹ سلگالی جائے اور پی نہ جائے بلکہ باتیں کی […]

Read More

غروب ۔۔۔ شہناز پروین سحر

December 7, 2019

غروب شہناز پروین سحر گھڑی میں ایک بج کر بیس منٹ ہو جانا کافی نہیں ہوتا ۔۔ اگر یہ پتہ نہ چل رہا ہو کہ یہ دن ہے یا رات ۔۔ یہ تنہائی کی ہی تاثیر ہے کہ وقت بھی آپ کو آپ کے حال پرچھوڑ دیتا ہے ۔۔  پتہ نہیں وقت نے اُسے چھوڑ […]

Read More

کتن والی ۔۔۔ سبین علی

December 7, 2019

کتن والی ( سبین علی ) سوت کو مختلف رنگوں میں رنگ کر امتزاج اور توازن کو صغریٰ مائی جانے کس طرح قائم رکھتی تھی. اور یہ بھی کسی کےعلم میں نہیں تھا کہ کچی آبادی میں بسنے کی بجائے جولاہوں کے اس مختصر کنبے نے جھگی بڑی نہر اور راج باہ کے بیچ میں […]

Read More

دس سوال ۔۔۔ سٹیفن ہاکنگز

December 7, 2019

سٹیفن ہاکنگز سے دس سوال ( سٹیفن ہاکنگز ) امریکی جریدے ٹائم نے نو برس پہلے اپنے قارئین کو دعوت دی کہ وہ مشہور سائنسدان اسٹیفن ہاکنگ سے سوال پوچھ سکتے ہیں۔ بے شمار سوالات موصول ہوئے جنکے جواب اسٹیفن ہاکنگ نے آن لائن دیے۔ ٹائم نے ان میں سے دس سوال منتخب کر کے […]

Read More

ایک خط ۔۔۔ اختر حسین جعفری

December 7, 2019

“ایک خط ــــــ آشنا ورثوں کے نام” (اختر حسین جعفری ) گئے زمانے کے راستے پر پہاڑ، سُورج، زمین، دریا نقوُشِ پا، نام، ذات، چہرہ میں اپنے چہرے سے مُنحرف ہُوں گئے زمانے کے راستے پر سزا کی رُت کے طویل دن کا خطیر ورثہ مِرا بدن ہے، مِرا لہُو ہے میں اپنے ورثے سے […]

Read More

راکھ ۔۔۔ سیمیں درانی

December 7, 2019

راکھ (سیمیں درانی ) کتنے خدا بپھرے چنگھاڑتے پھرتے ہیں کالی جبینیں،ناتریشیدا بال اہنے اپنےشبدوں کی تسبیحیں کرتے دندناتے چوڑی چھاتیاں لیے تکبر کے خمییر میں گندھے فتووں کی تلاش میں کوشاں ادھر تو جبیں موحد ہے دل جھکتا نہیں روح تڑپتی نہیں قدم مستقیم ہیں ہتھیلیاں سلی ہوئی۔ مگر وہ خدا اپنی بدبو دار […]

Read More

پانی کے جسم والی عورت۔۔۔ھروندر سنگھ

December 7, 2019

پانی کے جسم والی عورت (ہروندر سنگھ ) عورت کا جسم پانی سے بنا ھوتا ہے اسے چھوا تو جا سکتا ہے مگر پکڑا نہیں جا سکتا پگھلے بغیر اسکے ساتھ بغلگیر نہیں ھوا جا سکتا اسکے ساتھ پانی بن کر ہی ملا جا سکتا ہے ۔ عورت کے بدن تک پہچنے کا رستہ اسکے […]

Read More

غزل ۔۔۔ ریاض مجید

December 7, 2019

غزل ( ریاض مجید ) رات دن محبوس اپنے ظاہری پیکر میں ہوں شعلۂ مضطر ہوں میں لیکن ابھی پتھر میں ہوں اپنی سوچوں سے نکلنا بھی مجھے دشوار ہے دیکھ میں کس بے کسی کے گنبد بے در میں ہوں دیکھتے ہیں سب مگر کوئی مجھے پڑھتا نہیں گزرے وقتوں کی عبارت ہوں عجائب […]

Read More

مُردوں کی دعوت ۔۔۔ پُشکن

November 30, 2019

مُردوں کی دعوت ( الیگسانڈر پشکن ) آدریان پروخوروف Adrian Prokhoroff کے گھر کا سارا سازوسامان جنازہ لے جانے والی گاڑی پر لدچکا تھا۔ مریل گھوڑے چوتھی دفعہ بسمانیا  Basmannaiaسے نکتسکا Nikitskaiaیا سڑک کی طرف چلے جہاں اس نے نیا مکان خریدا تھا۔ تابوت ساز نے دکان مقفل کر باہر دروازہ پر اس اعلان کی […]

Read More

گوالن ۔۔۔ خالدہ حسین

November 30, 2019

گوالن ( خالدہ حسین ) ایک تھا بادشاہ، ہمارا تمہارا خدا بادشاہ۔ اس کے راج میں چاروں کھونٹ امن و امان، کوئی مسئلہ نہ مشکل۔ کوئی دشمن نہ حریف، مانو شیر بکری ایک گھاٹ پانی پیتے تھے۔ پس بادشاہ کا زیادہ وقت سیر و شکار میں گزرتا۔ کرنا خدا کا کیا ہوا کہ ایک روز […]

Read More
Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: