Author: Penslips Magazine

کاغذی پھول ۔۔۔ گارسیا مارکیز

September 14, 2019

کاغذی پھول ( گارسیا مارکیز ) صبح کاذب کے ملگجے اندھیرے میں مینا نے راستہ محسوس کرتے ہوئے اپنا وہ لباس پہنا جس کی آستینیں الگ ہو جاتی تھیں۔ پھر ٹرنک میں اس لباس کی آستینیں تلاش کرنے لگی۔ اُس نے کھونٹیوں پر اور دروازوں کے پیچھے تلاش کیا مگر بے سود۔ اُس کی کوشش […]

Read More

آنسو برائے فروخت ۔۔۔ سُمیرا عزام

September 14, 2019

آنسو برائے فروخت سمیرا عزام (فلسطین) مجھے نہیں پتہ کہ خزنہ کے لیے کس طرح ممکن تھا کہ وہ ایک ہی وقت میں مردوں کے لئے نوحہ خواں بھی تھی اوردلہنوں کے لئےآرائش گر بھی – جب مجھے پہلی دفعہ اس کو دیکھنے کا موقع ملا تو میں نے امی اور ان کی سہیلیوں سے […]

Read More

سنہری جلد ۔۔۔ نانک سنگھ

September 14, 2019

سنہری جلد ( نانک سنگھ ) ‘کیوں جی تسیں سنہری جلداں وی بنھدے ہندے او؟” خیر دین دفتری جو جلداں نوں پشتے لا رہا سی، گاہک دی گل سن کے بولیا- ”آہو جی جہو جہی کہو۔” گاہک اک ادھ کھڑ عمر دا سکھ سی۔ ہٹی دے پھٹے تے بیٹھ کے اوہ کتاب اتلے رومالاں نوں […]

Read More

ہم گنہ گار عورتیں ۔۔۔ کشور ناہید

September 14, 2019

ہم گناہ گار عورتیں ( کشور ناہید ) ہم گنہ گار عورتیں ہیں جو اہل جبہ کی تمکنت سے نہ رعب کھائیں نہ جان بیچیں نہ سر جھکائیں نہ ہاتھ جوڑیں یہ ہم گنہ گار عورتیں ہیں کہ جن کے جسموں کی فصل بیچیں جو لوگ وہ سرفراز ٹھہریں نیابت امتیاز ٹھہریں وہ داور اہل […]

Read More

غزل ۔۔۔ شہناز پروین سحر

September 14, 2019

غزل ۔ ( شہناز پروین سحر) جو ماں پہنتی تھیں وہ مُرکیاں نہیں بنتین اب اُس طرح کی کہیں بالیاں نہیں بنتیں کلایئوں سے اتر کر لہو میں پھیل گئیں وہ کرچیاں جو کبھی چوڑیاں نہیں بنتیں وہ سرخ گٹھڑی سے باہرکھڑی ہوئی دلہن سمجھ گئی ہے کہ اب گٹھڑیاں نہیں بنتیں بتا جو دل […]

Read More

کافی ۔۔۔ تنویر قاضی

September 14, 2019

کافی ( تنویر قاضی ) پیریں چوبے کنکر گیٹے ریت تے ٹُٹے شیشے کنڈ تےککراں دے کنڈیاں نیں پینگ ہلارا کیتا پھیتا پھیتا چُوڑی توڑ کے پیار ناپدی بانہہ نوں زخمی کیتا گڈی چڑھایا ٹیشن آکے ہنجواں رَلیا دید دا شربت پیتا اکھ دی رفو گری نال اوس نے دل دا چاک ناں سیتا پار […]

Read More

بے ادب سہیلیاں ۔۔۔ مایا مریم

September 14, 2019

بے ادب سہیلیاں ( مایا مریم ) جب میں دوپہر بارہ بجے اپنے بچے کو سکول سے لانے کے لئے گھر سے نکلی تو اس نے میری طرف مسکرا کر دیکھا۔ اس کا گھر میرے گھر کے عین سامنے تھا اور میں نے اسے ہمیشہ بنے سنورے ہوئے دیکھا تھا، سکول کے راستے پر ساتھ […]

Read More

ہے کوئی َ ؟ ۔۔۔ یوسف شہزاد

September 14, 2019

ہے کوئی ( یوسف شہزاد ) آج پھر آئینے سے گرد ہٹاتے ہوئے بالوں میں چاندی کا ڈھیر لیے اپنے شباب کو ڈھلتا دیکھ کر غربت پہ ہنستی عورت نے کہا نامراد تنگدستی نے میری نسوانیت کو زنگ آلود کردیا ہے میری حسن کی رعنایوں نے بھی اب ماند پڑنا شروع کر دیا ہے فطرت […]

Read More

اپوکلپس ۔۔۔ حرا ایمن

September 14, 2019

ایپو کلپس Apocalypse ( حرا ایمن ) میرا پینٹ برش بہت میلا ہو چکا ہے مگر اب اس ناکارہ شوق کو ترک کر دونگی اپنا ایزل اور کُچھ پورٹریٹس بیچ کر ایک بائیسکل خریدوں گی فیملی کی آخری تصویر پتلون کی پچھلی جیب میں چھپا کر ہینڈبیگ میں بس ایک چارجنگ بینک اور کُچھ روپے […]

Read More

One Hundred Years of Solitude … Garcia Marquez

September 7, 2019

GABRIEL GARCIA MARQUEZ was born in Aracataca, Colombia in 1928, but he lived most of his life in Mexico and Europe. He attended the University of Bogota and later worked as staff reporter and film critic for the Colombian newspaper El Espectador. In addition to ONE HUNDRED YEARS OF SOLITUDE, he has also written two […]

Read More
Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: