مائے نی کل رات ۔۔۔ شکیلہ جبیں

مائے نی کل رات

شکیلہ جبیں

مائے نی کل رات

اجے ہوئی نئیں سی سر گھی

ہر شے سی اوہدے ورگی

میرے ویڑے آ گیا چور

جد پا دتا میں شور

فیر گل ہوئی نہ بات

مائے نی کل رات

مکھ سر میرے چوں کڈھی

میرے منہ چوں بولی وڈی

میرے کھوہ کے لے گیا ہوش

دس میرا کیہہ دوش

چپ ہو گئے پھل تے پات

مائے نی کل رات

میرے کنیں دتا رُوں

میں چاں کیتا نہ چُوں

میں ہوکے گونگی بولی

گئی چڑھ سمے دی ڈولی

مینوں بُھل گئی میری ذات

مائے نی کل رات

میرے ہتھ پھڑا کے چھنی

وچ جھاڑ گیا اوہ کنی

میں ویکھ کے کیتا واہ

توں چور نیں ہے شاہ

ہُن پیکا دے گیا رات

مائے نے کل رات

میری خالی کر کے کھوپڑی

میرے دل دی ٹِکی چوپڑی

دل رکھ دتا میرے کول

جویں لج نال بدھا ڈول

میں ڈبی وچ فرات

مائے نی کل رات

Similar Posts:

Facebook Comments Box

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Calendar

January 2022
M T W T F S S
 12
3456789
10111213141516
17181920212223
24252627282930
31