نظم ۔۔۔ نازیہ نگارش

نظم

نازیہ نگارش

دکانوں پر سجی

رنگ برنگی آرزویئں

سادہ لوح دلوں کی راہ ایسے تکتی ہیں

اور اپنے دام میں لے لیتی ہیں

جیسے بازی گر

نو وارد پردیسی کو کچھ دیر کو

ایک نئی دنیا میں

لے جا کر کہہ دے

واپس آ جاو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔  تماشا ختم ہوا

آرزووں کے نام بہت خوشنما

بہت دل سوز، بے مول

دل موہ لینے والے

جادو نگری کے ہوں

کوئی خاموش

دلربا قاتل

Facebook Comments Box

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Calendar

February 2024
M T W T F S S
 1234
567891011
12131415161718
19202122232425
26272829