تقسیم ۔۔۔ شہناز پروین سحر

تقسیم

(شہناز پروین سحر)

کب تلک سنبھلے گا آخر

شاخ سے اپنا گلاب

چُھت ہی جائے گا

بدن کا ساتھ

اک دن زندگی کے ہاتھ سے

ہاتھ چھوٹے ہیں ہمیشہ

ساتھ ٹوٹے ہیں سدا

جسم کا ٹکڑا ہے لیکن

جسم سے کٹ جائے گا

وہ مرے حصے میں ہے

پھر بھی

غلط بٹ جائے گا

Facebook Comments Box

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Calendar

June 2024
M T W T F S S
 12
3456789
10111213141516
17181920212223
24252627282930