غزل ۔۔۔ سلطنت قیصر

غزل

(سلطنت قیصر)

بے خبر دوستوں سے دور رہوں

کیوں نہ سب الجھنوں سے دور رہوں

رنگ سے ، موسموں سے دور رہوں

کس طرح بارشوں سے دور رہوں

کان آہٹ پہ رکھ کے لوٹ آوں

اور پھر دستکوں سے دور رہوں

زرد پتوں کی بارشوں میں پھروں

اور ترے راستوں سے دور رہوں

آیئنوں میں اچھال دوں آنکھیں

اور پھر آیئنوں سے دور رہوں

Facebook Comments Box

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Calendar

February 2024
M T W T F S S
 1234
567891011
12131415161718
19202122232425
26272829