Day: October 19, 2019

منگتا ۔۔۔ چیخوف

October 19, 2019

منگتا ( انتون چیخوف ) ‘‘سر، مینوں بھکھ لگی ہے۔ ربّ دی سونہہ میں تنّ دناں توں کجھ نہیں کھادھا۔ پنج سال میں سکول ماسٹر رہا اتے اپنے اک ساتھی کرمچاری دیاں سازشاں کرکے نوکری توں ہتھ دھو بیٹھا۔ ہن میں سال بھر توں وہلا پھردا ہاں۔”پیٹرسبرگ دے وکیل سکووتسو نے اس دے نیلے پھٹے […]

Read More

سرخ بھیڑیں ۔۔۔ پیٹر ہانڈیکے

October 19, 2019

سرخ بھڑیں ( پیٹر ہانڈکے) ایک عورت اچانک بولنا شروع کردیتی ہے۔ بچو! وہ سورہا ہے! وہ وہاں دروازے کے پیچھے بے خبر سورہا ہے۔ شاید تھوڑی دیر پہلے وہ کوئی خواب دیکھ رہا تھا کیونکہ ابھی جب میں اس کے کمرے میں گئی تو اس کی چادر فرش پر پڑی تھی۔ وہاں اس قدر […]

Read More

شب سے ڈرتا ہوں میں ۔۔ اختر حسین جعفری

October 19, 2019

شب سے ڈرتا ہوں میں ( اختر حسین جعفری ) رات کے فرش پر موت کی آہٹیں پھر کوئی در کھلا کون اس گھر کے پہرے پہ مامور تھا کس کے بالوں کی لٹ کس کے کانوں کے در کس کے ہاتھوں کا زر سرخ دہلیز پر قاصدوں کو ملا ؟ کوئی پہرے پہ ہو […]

Read More

غزل ۔۔۔ گلزار

October 19, 2019

غزل ( گلزار ) پیڑ کے پتوں میں ہلچل ہے، خبردار سے ہیں شام سے تیز ہوا چلنے کے آثار سے ہیں ناخدا دیکھ رہا ہے کہ میں گرداب میں ہوں اور جو پُل پہ کھڑے لوگ ہیں، اخبار سے ہیں چڑھتے سیلاب میں ساحل نے تو منہ ڈھانپ لیا لوگ پانی کا کفن لینے […]

Read More

غزل ۔۔۔ ذوالفقار تابش

October 19, 2019

غزل ( ذوالفقار تابش ) دوست اک راز دان مل جائے میری چپ کو زبان مل جائے بیٹھنے کو زمین تھوڑی سی تھوڑا سا آسمان مل جائے ایک چھوٹی سی ہے طلب دل میں اس کا تھوڑا سا دھیان مل جائے مانگنا ہے کچھ اس پری رُو سے جان کی گر امان مل جائے آپ […]

Read More

درد کہانی ۔۔۔ عائشہ اسلم

October 19, 2019

 درد کہانی ( عائشہ اسلم ) پیروں کی اِیڑھیوں کا درد  میرے سفر کی گواہی تو ہے  یا پھر ٹھہرے رہنے کا اِشارہ  مُجھے یہیں رُکنا ہو گا  بائیں ہاتھ کی اُنگلیوں کا درد  اُس کا راز ہے کیا  سوچتی ہوں  پورا بدن اِک پیڑھ ہو جیسے  ہاں تھکن ہانپتی ہے  کُچھ کہنا بھی چاہتی […]

Read More

پیٹ کی لے پہ ناچتی عورت ۔۔ صفیہ حیات

October 19, 2019

پیٹ کی لے پہ ناچتی عورت ( صفیہ حیات ) بچی نے ابھی ایک پستان کا دودھ پیا تھا نائیکہ ہاتھ میں گلوریوں  کی تھالی تھامے آ دھمکی اور وہ بچی کی پیاس کے گھنگھرو پاؤں پہ باندھے پیٹ کی لے پہ نا چنے لگ گئی وہی کمرہ وہی ڈگڈگی وہی دیواروں کے ساتھ چمٹی […]

Read More

لحد کھلی ہے۔۔۔ غلام دستگیر ربانی

October 19, 2019

لحد کھلی ہے ( غلام دستگیر ربانی ) اپنے ہونے کے شعور سے نا آشنا، سب اپنا جامد اظہار کر رہے تھے۔ میز کی چھاتی پر کاغذ پھڑ پھڑائے چھوٹے بلب سے نکلتی مریل روشنی کا حلقہ، سگریٹ کا دھواں، ایش ٹرے، چائے کی پیالی، سوچ کی گرد میز پر جھکے بوڑھے کا رعشہ زدہ […]

Read More

در ِ نیم وا ۔۔ ذوالفقار تابش

October 19, 2019

درِ نیم وا ( ذوالفقار احمد تابش ) تبصرہ۔راشد جاوید احمد پھانس سینے میں گڑی رہتی ہے رات کمرے میں کھڑی رہتی ہے مرے پہلو میں مری پرچھایئں یونہی چپ چاپ پڑی رہتی ہے پروفیسر رشید احمد صدیقی نے غزل کو ’’ اردو شاعری کی آبرو‘‘ کہا ہے ۔حقیقت یہی ہے کہ اردو غزل واقعی […]

Read More
Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: