پھول سنگ سبزگی،صبا بھیجو ۔۔۔ فرح خاں

نظم

( فرح خان )
 · 

پھول، سنگ , سبزگی , صبا بھیجو
حبس ہے , سرمئی ردا بھیجو

اب تو جینا محال ہے میرا
لادوا ہو چکی , دوا بھیجو

درد کا اندمال ہو شاید
تم ذرا اپنی خاکِ پا بھیجو

چوم کر آنکھ سے لگا لوں گی
تم ہوا ہاتھ جب قبا بھیجو

کام آتی نہیں دعا کوئی
اب فقط دل سے بد دعا بھیجو

جو مجھے اور میرا غم سمجھے
کوئی ایسا مرے خدا بھیجو

ایک مدت سے میں نہیں روئی
ہجر کا سلسلہ نیا بھیحو

Share your Thoughts:

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: