پرندے بیوقوف نہیں ہوتے ۔۔۔ حفیظ تبسم

پرندے بے وقوف نہیں ہوتے

حفیظ تبسم

گمنام جزیرہ ہے
اور تنہا آدمی
جس کے چاروں طرف
پرندے نت نئی آوازیں نکال رہے ہیں

وہ یاد کرتا ہے
فاختہ کے قدیم گیت
اور عقاب کی درندگی کا مرثیہ
جب جنگل اور انسان
رشتے میں بھائی لگتے تھے
اور ایک ہی رنگ کے کپڑے پہنتے تھے

وہ قدیم روایت کے احساس تلے
جماہی لیتا ہے
اور تاریخ دہرانے کے لیے
پرندوں کے قبیلے میں شمولیت کی درخواست دیتا ہے

Similar Posts:

Share your Thoughts:

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Calendar

June 2021
M T W T F S S
 123456
78910111213
14151617181920
21222324252627
282930  
Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: