فیس بک کا موت سے رشتہ ابھی نیا ہے ۔۔۔ ثروت زہرا

فیس بک کا موت سے رشتہ ابھی نیا ہے

( ثروت زہرا )

موت نے کوئے ابد سے آکے

خاموشی سے

ٹا ئم لا ٰئن پر جگہہ بنا لی

آ ئکن۔۔۔۔۔۔ اپنی شکل پہ رکھے

جذبوں کی تصویر بنانا

بھول گئے ہیں

ہندسے۔۔۔۔

لا متناہی گنتی گننے چلے گئے ہیں

جلتی بجھتی تصویروں کے سب انگارے

راکھ میں ڈھل کراسٹیٹس کو ڈھانپ چکے ہیں

حرف کی دھڑکن گوندھنے والی

ساری گرہیں ۔۔اک اک کر کے کھلنے لگی ہیں

ماتمی دف پہ ساری سطریں ناچ رہی ہیں

پروفائل اور البم کی ساری تصویریں

دم سادھے حیران کھڑی ھیں۔۔۔۔۔۔

جذبوں کے تالاب سے ہلچل کھیلنے والے

دل اور آنکھیں خاک ہوئے ہیں

خوابوں کی اعصابی لہریں

انٹرنیٹ کی حد میں نہیں ہیں

شعر کے مصرعے موت کے منہ میں

گھونگھے ڈالے بول رہیں ہیں

موت جرس کے آوازے نے

فیس بک کو گھیر لیا ہے

مگر ابھی تو

فیس بک کا موت سے رشتہ بہت نیا ہے

Read more from Sarwat Zehra

Read more Urdu Poetry

Share your Thoughts:

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: