ٹوٹی ہوئی سڑکیں ۔۔۔ مسعود قمر

ٹوٹی ہوئی سڑکیں

مسعود قمر

مجھے اکثر محسوس ہوتا ہے

وہ

میری طرف آ رہی ہے

میں

شیو بنا کے، بالوں کو ڈرائی کر کے

تھری پیس سوٹ، سرخ رنگ کا سکارف پہن کر

دس سال پہلے خریدی کونیاک نکالتا ہوں

سالوں پہلے خریدا گیا ہوانا کا

ادھ بجھا سگار سلگاتا ہوں

مگر

موت ٹوٹی سڑکوں کی وجہ سے

خود آنے کی بجائے ادھ موئی زندگی

میری طرف روانہ کر دیتی ہے

موت کی طرف سے بھیجی گئی زندگی

جو خود ادھ موئی ہے

موت کا کیا دروازہ کھولے گی

مجھے

خود موت کو مارنا ہوگا

تاکہ

بھرپور زندگی گزار سکوں

Facebook Comments Box

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Calendar

May 2024
M T W T F S S
 12345
6789101112
13141516171819
20212223242526
2728293031