گیلی چُپ ۔۔۔ ناہید وِرک

گیلی چپ

ناہید ورک

 نادیدہ خوابوں کے مُردہ پر

بوجھل آنکھوں کی پتلیوں سے چمٹے ہیں

اجالوں کی آہٹیں

سماعتوں پر اتریں بھی

مگر صبح کا آیئنہ

گیلی چپ کے کہرے سے اٹا ہے

سورج کی حدت پی کر بھی

اجالا دھندلکوں میں گھرا ہے

نادیدہ وجود کا آسیب

گیلی چپ کا سایہ

روح کی خستہ دیواروں سے چمٹا ہے

اور فرار ممکن ہی نہیں۔

Facebook Comments Box

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Calendar

June 2024
M T W T F S S
 12
3456789
10111213141516
17181920212223
24252627282930