خدا کہاں ہے ؟ ۔۔۔ صفیہ حیات

خدا کہاں ہے ؟

صفیہ حیات

خدا کہاں ہے ؟

بھوکے بچے نے

کوڑے کے ڈھیر سے روٹی اٹھاتی

ماں سے پوچھا

گیارہ سالہ گڑیا نے

خدا کو ماننے سے انکار کر دیا

جب ساگ کاٹتی ماں کو ہوس کا نشانہ بنتے

اور  پنکھے کے ساتھ جھولتے دیکھا

جنگل میں آگ لگی

انڈوں سے جھانکتے

چڑیا کے بچوں کی معصومیت جل کر راکھ ہو گئی

چڑیا نے چیخ چیخ کر

جنگل سر پر اٹھا لیا

خدا کہاں ہے ؟

احتجاجی چیخیں

چرچ، مندر، مسجد

اور گوردوارے میں بھاگتی پھریں

لاوڈ سپیکر پہ

مناجات کے شور میں

سب چیخیں یہ پوچھتی مر گیئں

خدا کہاں ہے ؟

Facebook Comments Box

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Calendar

March 2024
M T W T F S S
 123
45678910
11121314151617
18192021222324
25262728293031