جب ہم گندم کاٹیں گے ۔۔ اقصیٰ گیلانی

“جب ہم گندم کاٹیں گے”

اقصیٰ گیلانی

گیارہ مہینے بھوک کاٹ کر

ایک مہینہ

جی بھر کر روٹی کھائیں گے

جب ہم گندم کاٹیں گے

تو سمجھیں گے

ہم نے بھوک فتح کر لی ہے

کھیت میں ڈھول بجائیں گے

ہم ناچیں گے

ہم گائیں گے

باندھ کے نازک ڈوری سے

اہرام مصر سے بھی اونچے

ہم اپنے خواب اڑائیں گے

کوئی شاطر کوا آئے گا

میری سونے جیسی گیہوں کے

سارے دانے چگ جائے گا

اور جاتا ہوا ظالم پنچھی

کاٹے گا خواب کی ڈوری بھی

ہم ہار نہ پھر بھی مانیں گے

ہم یاس نہیں پھیلائیں گے

امید کے نغمے گائیں گے

ہم اگلی فصل اگائیں گے…

Facebook Comments Box

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Calendar

February 2024
M T W T F S S
 1234
567891011
12131415161718
19202122232425
26272829