افسانہ

شگن کے لڈو ۔۔۔ قیصر نذیر خاور

May 25, 2019

شَگن کے لَڈو٘ قیصر نذیر خاور  (نوٹ ؛ ‘ نرالا سویٹس ‘ اور ‘ چاشنی ‘ کے علاوہ باقی سب کردار فرضی ہیں ۔ کسی قسم کی مماثلت محض اتفاقیہ ہو گی ۔) اس کے سامنے ’ چاشنی‘ جو کبھی ’ نرالاسویٹس‘ کہلایا کرتی تھی ، کے ان بڑے بوندی لڈوﺅں کے وہ ڈبے پڑے […]

Read More

دوسری تدفین ۔۔۔ حمید قیصر

May 25, 2019

دوسری تدفین (حمید قیصر) ۔ اب کے میں نے تہیہ کرلیا تھا کہ میلینیم کارگو والے کسٹم ایجنٹ کی پکی چھٹی کروادوں گا، حیرت ہے کراچی سے برطانیہ آئے اسے بیس سال ہوچلے تھے مگر مجال ہے جو اس میں ذراسی بھی کوئی تبدیلی آئی ہو؟ کام کرنے کا وہی دیسی سٹائل ۔ کارگو ٹرمینل […]

Read More

قیمتی تابوت ۔۔۔ نسیم سید

May 25, 2019

قیمتی تابوت ( نسیم سید ) “فک ”  کوریڈور کے سنا ٹے میں میرے پیچھے سے کسی نے اس قدر بلند آواز میں کہا کہ میں اچھل پڑی اور مڑکے دیکھا ۔ وہ اپنے آ پ میں گم خود سے محو گفتگو تھا ۔ you can all go to hell. .. I give a shit” […]

Read More

دُعائے مستجاب ۔۔۔ ثمینہ سیـد

May 18, 2019

دعائے مستجاب ثمینہ سید  بچے بہت معصوم ہوتے ہیں۔ان کی ہر دعا اللہ پاک پوری توجہ سے سنتے ہیں اور پوری کرتے ہیں عنبرین بہتے آنسووُں کے ساتھ بیٹے کے بالوں میں انگلیاں پھیرتے ہوئے آواز کو ذرا صاف کر کے اس کی توجہ بٹا رہی تھی۔ “مِیں کہوں بابا جانی واپس آجائیں۔ تو یہ […]

Read More

آخری جلسہ ۔۔۔ آندرے گروشینکو

May 18, 2019

آخری جلسہ آندرے گروشینکو مترجم: ستار طاہر بڈھے باشکوف نے اپنی بہو سے کہا: “جانتی ہو، آج کیا دن ہے۔ دیکھو، دھوپ نکل آئی، میرے باہر بیٹھنے کا انتظام کر دیا؟” بہو مسکرائی، وہ اچھے نین نقش کی تھی، لیکن اس کا وزن بڑھتا جارہا تھا اور وہ خاصی بے ڈول ہورہی تھی، بڈھے باشکوف […]

Read More

کتبہ ۔۔۔ غلام عباس

May 11, 2019

کتبہ  غلام عباس شہر سے کوئی ڈیڑھ دو میل کے فاصلے پر پُر فضا باغوں اور پھلواریوں میں گھر ی ہوئی قریب قریب ایک ہی وضع کی بنی ہوئی عمارتوں کا ایک سلسلہ ہے جو دُور تک پھیلتا چلا گیا ہے ۔ عمارتوں میں کئی چھوٹے بڑے دفتر ہیں جن میں کم و بیش چار […]

Read More

پیار کا پہلا خط ۔۔۔ شہناز پروین سحر

May 11, 2019

پیار کا پہلا خط ( شہناز پروین سحر )   ہر کسی کی زندگی میں ایک نہ ایک “پہلا خط” ضرور ہوتا ہے ۔۔ میں نے جب نیا نیا لکھنا شروع کیا تو ہر وقت خود کو آزمائش میں ڈالے رکھتی ۔۔ امی ابو سے سنے گئے لفظ ، کسی نہ کسی آئے گئے سے […]

Read More

سمندر کی چوری ۔۔۔ آصف فرخی

May 4, 2019

سمندر کی چوری ( آصف فرخی  ) ابھی وقت تھا۔ پانی اور آسمان کے بیچ میں روشنی کی وہ پہلی، کچی پکی، تھرتھراتی ہوئی کرن پھوٹنے بھی نہ پائی تھی کہ شہر والوں نے دیکھا سمندر چوری ہوچکا ہے۔ دن نکلا تھا نہ سمندر کے کنارے شہر نے جاگنا شروع کیا تھا۔ رات کا اندھیرا […]

Read More

رپ وان ونکل ۔۔۔ اسلم سراج دین

April 27, 2019

رِپ وان وِنکل ( اسلم سراج دین ) خزانے کا دفتر سپرنٹنڈنٹ نے تربک کر قلم چھوڑ دیا اور ایک ضیق النفس کھانسی چیخا۔ ہڈیالے پنجوں میں فائلیں اٹھائے ایک انسانی ڈھانچا دفتر میں داخل ہو رہا تھا۔ پیلا  پسینہ سپرٹنڈنٹ کے کپڑوں کو تر کرنے لگا۔ با لآخر صدیوں پر محیط یہ لمحہ بیت […]

Read More

نعرہ ۔۔۔ سعادت حسن منٹو

April 20, 2019

نعرہ ( سعادت حسن منٹو ) اسے یوں محسوس ہوا کہ اس سنگین عمارت کی ساتوں منزلیں اس کے کاندھوں پر دھر دی گئی ہیں۔ وہ ساتویں منزل سے ایک ایک سیڑھی کر کے نیچے اُترا اور ان تمام منزلوں کا بوجھ اس کے چوڑے مگر دبلے کاندھے پر سوار ہوتا گیا۔ وہ مکان کے […]

Read More
Show Buttons
Hide Buttons
%d bloggers like this: